Home » ویری کوسل

ویری کوسل

men-private-part

مرد کی تولیدی اعضاء میں فوطوں کو وہی اہمیت حاصل ہو تی ہے۔ جس کسی عورت کی تولیدی نظام میں ہیضہ دانی کو جس طرح عورت کی ہیضہ دانی میں حیضہ حیاتی بنتا ہے اس طرح مرد کے فوطوں میں حیاتی جرثومے یعنی سپر مزافزائش پاتے ہیں اور پھر ان کے ملنے سے انسانی وجود کی تخلیق ہوتی ہے لہٰذا ان دونوں میں سے اگر ایک میں بھی خرابی ہو جائے تو بچہ پیدا نہیں ہو سکتا۔ ویری کوسل بھی فوطوں کی ایک ایسی ہی بیماری ہے جس کی وجہ سے مردانہ بانجھ پن (بے اولادی )کی تکلیف ہو سکتی ہے۔ اس بیماری کے باعث فوطوں کے وریدوں میں خون زیادہ میقدار میں اکٹھا ہو جانا جس کے نتیجہ میں وریدیں پھول جاتی ہے اور اس کے گچھے بن جاتے یعنی آپس میں الجھ سی جاتی ہیں۔ وریدوں کے پھولنے سے مریض کے فوطوں میں بھاری پن اور بوجھ سا محسوس ہوتا ہے فوطوں کے تھیلے ٹٹولنے سے یوں محسوس ہوتا ہے جیسے تھیلی کے اندر گوں کا کو ئی گچھا موجود ہے۔ فوطوں کی اس غعر طبئی کیفیت سے فوطو ں پر موجود تو لیدی جراثیم کی صحت اور مقدارپر اثر پڑنا لازمی امر ہے۔ چباچہ یعض مردوں کو اس کی وجہ سے اولیگوسپرمیا کی بیماری بھی ہو سکتی ہے یعنی سپرمز کی مقدار کم ہو سکتی ہے یا پھر اس کی صحت مندی پر منفی اثر ات مرتب ہو سکتے ہیں۔

وریدوں-کے-پھولنے-سے-مریض-کے-فوطوں-میں-بھاری-پن

Leave a Reply